top of page
Naat Academy Naat Lyrics Naat Channel-Naat-Lyrics-Islamic-Poetry-Naat-Education-Sufism.png

نعت کی خوشبو گھر گھر پھیلے

کہاں جھکی ہے جبینِ نیاز کیا کہنا

مدینے تک نہیں محدود رحمتیں ان کی کرم یہاں بھی ہیں ان کے کرم وہاں بھی ہیں جہاں پہ دوسرا نقشِ قدم نہیں کوئی میرے حضور کے نقش قدم وہاں بھی ہیں

کہاں جھکی ہے جبین نیاز کیا کہنا

رہا نہ کوئی بھی اب راز راز کیا کہنا

ہے مجھ پہ بھی نگہہ بخت ساز کیا کہنا

عطائے خواجہ عالم نواز کیا کہنا

دَرِرسول کی نسبت ہی سرفرازی ہے

نیاز مندکو حاصل ہے ناز کیا کہنا

نصیب امت عصیاں زدہ سنوار گئی

حضور کی نگہہ نیم باز کیا کہنا

جُھکے جو سرور عالم کے آستانے پر

ہوئے جہاں میں وہی سرفراز کیا کہنا

نبی کی یاد ہے اور عشق ہے امام اپنا

نصیب امت عصیاں زدہ سنوار گئی

تمہارے دامن رحمت کی ٹھنڈی چھاؤ تمہیں

ہر ایک غم سے ہیں ہم بے نیاز کیا کہنا

رُخ رسول حقیقت میں ہےوہ آئینہ

جس آئینے میں ہے آئینہ ساز کیا کہنا

یہ میرے دردِ محبت کا مجھ پہ احسان ہے

مرا نبی ہے مرا چارہ ساز کیا کہنا

مری طلب سے سوا مجھ کو بخش دینگے حضور

عیاں ہے اُن پہ مرے دل کا راز کیا کہنا

خطا کے بعد ِ ندامت قبول کی تونے

مرے کریم مرے کار ساز کیا کہنا

نہ لَب ہلے نہ بڑھے ہاتھ بھر گئی جھولی

عطائے درگہہِ بندہ نواز کیا کہنا

سیاہ کملی کے ہر تار سے مرے آقا

عیاں ہے بخشش ِ امت کاراز کیا کہنا

کس آستاں پہ جھکی ہے مری جبیں خاؔلد

ہے بندگی کو بھی سجدوں پہ ناز کیا کہنا

1 view
bottom of page