top of page

نعت کی خوشبو گھر گھر پھیلے

Naat Academy Naat Lyrics Naat Channel-Naat-Lyrics-Islamic-Poetry-Naat-Education-Sufism.png

اے نبی پیار سے جس نے تمہیں دیکھا ہوگا

اے نبی پیار سے جس نے تمہیں دیکھا ہوگا اس کی آنکھوں سے بھی اک نور برستا ہوگا

جس نے ایماں کی نظر سے تمہیں دیکھا ہوگا اس کی آنکھوں سے بھی کیا نور برستا ہوگا

جس نے طوفاں میں کبھی تم کو پکارا ہوگا موج طوفاں سے ملا اس کو سہارا ہوگا

جب فرشتوں نے اسے حشر میں پکڑا ہوگا اک سیہ کار گنہگار یہ کہتا ہوگا

لے چلو مجھ کو مرے شافع محشر کے حضور وہ جو چاہیں گے وہی فیصلہ میرا ہوگا

حسن خوباں کو بھلا کیا وہ سمجھتا ہوگا جس کی آنکھوں میں ترے حسن کا جلوہ ہوگا

زہد و تقویٰ کا کسی اور کو دعویٰ ہوگا مجھ سے مجرم کو فقط تیرا سہارا ہوگا

قبر میں اس رخ پر نور کا جلوہ ہوگا موت جب آئے گی تو ان کا نظارا ہوگا

رب نے یہ فرمایا نبی سے اپنے میرے محبوب جو تیرا ہو وہ میرا ہوگا

جس نے آقا تمہیں ایماں کی نظر سے دیکھا اس کی نظروں سے بھی اک نور ٹپکتا ہوگا

جن کا مجرم ہوں مجھے لے چلو ان کے در پر ان کے لب سے جو مرا فیصلہ ہوگا ہوگا

میرے سرکار جو آئیں گے براہ تربت! قبر میں میری اجالا ہی اجالا ہوگا

نور مہتاب نبوت سے بہ فیض نوری قبر میں میری اجالا ہی اجالا ہوگا

قلب میں جن کے وہ آباد ہیں ایماں کی طرح خلد میں عشقِ نبی سے وہ مہکتا ہوگا

کانپتا جسم نظر شرم سے نیچی نیچی! اور ہونٹوں پہ دہائی کا یہ کلمہ ہوگا

ان کے قدموں پہ مچل کر یہ کہے گا مجرم! آپ جو چاہیں گے وہ فیصلہ میرا ہوگا

لغزیشیں لاکھ ہوں لیکن مرے رحمت والے! جادۂ حق سے قدم میرا نہ بہکا ہوگا

ان کی رحمت کے تصدق وہ کہیں گے فوراً! آج ہے کون جو میرے سوا تیرا ہوگا

بخشوائیں گے قیامت میں گنہگار کو وہ اوج پر قسمت عاصی کا ستارا ہوگا

اس طرح خلد میں عاصی تو چلے جائیں گے اور لب زائد عیا رپہ غوغا ہوگا

چاہنے والے ہوئے ان کے خدا کے محبوب اور جس کو وہ چاہیں گے وہ کیسا ہوگا

رند میخانہ رضوی ہے بلا نوش مگر بادہ حُبِ نبی پی کے بھی پیا سا ہوگا

نام یہ جس نے دیا اس کو خبر تھی شاید ان کاریحاؔں کبھی دنیا میں چمکتا ہوگا

ریحانِ ملت – ریحان رضا خان بریلوی

NaatAcademy #OwaisRazvi

14 views

Recent Posts

See All

شہر نبی ﷺ تیری گلیوں کا

Shehre Nabi ﷺ Teri Galiyo Ka Nakhsha Hi Kuch Aisa Hai Khuld Bhi Hai Mustaq Ziyarat Jalwa Hi Kuch Aisa Hai Dil Ko Sukun De Aankh Ko Thandak Rouza Hi Kuch Aisa Hai Farshe Zami Par Arshe Bari Ho Lagta Hi

ملتا ہے تیرے در سے زمانے کو فیض عام

ملتا ہے تیرے در سے زمانے کو فیض عام دنیا کے بادشہ بھی اسی در کے ہیں غلام تیرا غلام وہ کہ جو شاہوں کو بھیک دے نسبت نے دے دیا ہے بلندی کا وہ مقام دیکھیں گے حشر میں تری وہ شان پرجمال بے شک کرم بنائے گا ا

bottom of page